شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

غزل

تمہارا غم نہیں کافی ، ہمارا دل جلانے کو
نئے کچھ روگ پالیں گے پرانے دُکھ بھلانے کو

یہ دن اپنا گذرتا ہے اُٹھائے بوجھ فرقت کا
چلی آئی ہیں پھر یادیں ہمیں شب بھر جگانے کو

تمہارے نقش گر ہاتھوں میں سارے رنگ کچے ہیں
کہو تو ہم چلے آئیں لہو اپنا ملانے کو

ہوئے ہیں داخلِ زندان مگر تم سے نہیں غافل
صبا کو ہم نے بھیجا ہے تمہارا حال لانے کو

تماشا ہو اگر تقدیر کا ، تب دِل بہلتا ہے
اُتر آتے ہیں تارے بھی مری راہیں سجانے کو

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں