شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

غزل

پیار کرنا ہے تو پھر دل کو بنائو پتھر
کانچ کے شہر میں اب ڈھونڈکے لائو پتھر

اس کو چا ہا ہے تو پھر اس کی جفا بھی جھیلو
اپنے احساس پہ ہر روز گرائو پتھر

اب ہے ویرانہ جہاں پیار کبھی بستا تھا
اس کے ملبے سے ذرا دُور ہٹائو پتھر

میں نے اس شہر میں جس بُت کی غلامی کی ہے
تم اسی بُت کی گواہی میں بلائو پتھر
یہ مرے شہرِ خموشاں کا ہے دستور عجب
جو کوئی لب کو بھی کھولے تو اُٹھائو پتھر

میں نے جو سنگ تراشا ہے خدائی کے لیے
آئو اس بُت کے مقابل کوئی لائو پتھر

موت کے بعد مری قبر کے کتبے کے لیے
اُس کی دیوار سے اِک مانگ لے لائو پتھر

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں