شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

غزل

کہاں سے چلے تھے کہاں آگئے ہیں
یہ وحشت کے رستے ہمیں بھا گئے ہیں

ہمیں زندگی سے نہیں خوف کوئی
ہمیں زیست کے حوصلے آگئے ہیں

روانہ ہوئے کشتیوں میں مسافر
ہمیں اِک جزیرے میں بھٹکاگئے ہیں

یہ تقصیرِ آدم نہیں اور کیا ہے
کہ جنت سے اُٹھ کر یہاں آگئے ہیں

ہر اِک اپنا اپنا صنم پوجتا ہے
خدائی میں کتنے خدا آگئے ہیں

محبت ہو حاصل تو لگتاہے ایسا
کہ مٹھی میں دونوں جہاں آگئے ہیں

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں