شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

حمد باری تعالی

ٰ

شاید مجھے مل جائے خدا ، سوچ رہی ہوں
کیوں طور کے جلووں کی ضیا ،سوچ رہی ہوں

ہونا تھا گناہوں پہ بھی شرمندہ مگر میں
اب تک تو ترا لطف وعطا، سو چ رہی ہوں

چھا نے ہی نہیں میں نے ابھی دشت و بیاباں
بس من میں اترتے ہی فنا سوچ رہی ہوں

اے میرے خدا مجھ کو بھی توفیق عطا کر
لکھوں میں تری حمد و ثنا،سوچ رہی ہوں

اُترے مرے دل میں بھی ترا نورِ جہانتاب
رہتے ہوئے ظلمت میں ضیا،سوچ رہی ہوں

 

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں