شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

غزل

ملے ہو تم تو سبھی فاصلے مٹا دیں گے
تمھاری سوچ سے بڑھ کر تمہیں وفا دیں گے

رہے گا تم کو نہ شکوہ کبھی نصیبوں کا
تمھارے سوئے مقدر کو بھی جگا دیں گے

تم ایک بار ذرا اعتماد کر دیکھو
ہزار خوف تمھارے یونہی مٹا دیں گے

ہر ایک شام کو آنکھیں تمھیں بلائیں گی
دِکھا کے خواب تمھارے اُنھیں سلا دیں گے
تمھارے پیار میں چکھیں گے موت کی لذت
حیات و موت کو معنی نئے سکھا دیں گے

تمھاری ذات کی تنہائیوں کو بانٹیں گے
تمھاری ذات کو ہم انجمن بنا دیں گے

تمھارے نام سے اب ہوگی شاعری ساری
کہیں پہ نظم کہیں پہ غزل بنا دیں گے

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں