شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

غزل

یوں ہم سے نگاہیں نہ چرایا کرو جاناں !
غیروں کی طرح تم نہ ستایا کرو جاناں!

شرمندۂ تعبیر ہوں لازم تو نہیں ہے
ہاں! خواب تو آنکھوں میں بسایا کرو جاناں!

ہم تم کوبھلانے کی کریں گے کوئی تدبیر
تم بھی تو ہمیں یاد نہ آیا کرو جاناں !

کھلتے نہیں صحرا میں گل و لالہ تو کیا غم
کانٹے ہی محبت سے اُگایا کرو جاناں!

ہم پیار جتانے کو اگر روٹھ ہی جائیں
تم پیار نبھانے کو منایا کرو جاناں!

سنتے ہیں دعائوں سے بدل جاتی ہے قسمت
تم ہاتھ یقیں سے تو اٹھایا کرو جاناں!

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں