شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

ابلیس کے نام

کس درجہ انوکھا ترا اندازِ جفا ہے
ابلیس ! تو انکار کی جرأت کا خدا ہے

تو منکرِ تخلیقِ خدا ، منکرِ تصدیق
انکار ترا وصف ہے یہ وصف کی توثیق

تھا سجدۂ اقرار تری ذات کا اثبات
لیکن ہے ’’نفی‘‘ تیرے لیے وقت کی سوغات

تو نار کے زمرے میں رہا نور سے بیزار
پھر کیسے کھلیں تجھ پہ کسی رمز کے اسرار

اے کاش! کہ تو سجدۂ خاکی کو سمجھتا
پھر اپنی زباں لہجۂ شاکی کو سمجھتا

محصور ہے تو اپنی پرستش میں ، اَنا میں
دیوار بھی رکھتا ہے سدا قصرِ خدا میں
اُس ذات میں تو جذب ہو، امکاں تو بہت تھا
ارمانِ ملاقات کا ساماں تو بہت تھا

لیکن تجھے اس بات کا احساس نہیں تھا
کُچھ عشق و محبت کا تجھے پاس نہیں تھا

تو غرق ہوا کبر و ریا شورِ اَنا میں
اب خاک اُڑا چاروں طرف خاک سرا میں

٭٭

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں