شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

تیری یاد کا روشن چاند

تیری یاد کا روشن چاند

دِل کے نگر میں
شام ڈھلے تو
دُنیا کا چہرہ دھندلائے
اور آوازیں دھیرے دھیرے
چپ دریا میں اُترتی جائیں
سوچ کی پاگل بپھری لہریں
دل کے کناروں تک آجائیں
بولتے بولتے میرے یہ لب
جب تھک کر کچھ سستا جائیں
مجھ کو گھورتی کھوجتی نظریں
منظر سے اوجھل ہو جائیں
لب پہ سجی نقلی مسکان
اور وہ سارے رسمی جملے
اِک اِک کرکے اُترتے جائیں
بے بس آنکھوں کے کاجل کی
بوجھل دھار پھسلتی جائے
ہاتھ سے اُس کے ہاتھوں کی
سب خوشبوئیں بھی اُڑ جائیں
میری زلفوں کے سب بل
کھل کے شانوں پر لہرائیں
تنہائی کہ شب کا زہر
چاروں اور بکھرتا جائے
جھوٹے لوگوں کی سب باتیں
بے معنی ہونے لگ جائیں
تب اے جاناں!
ان لمحوں میں
دِل کے اُفق پر آجاتا ہے
تیری یاد کا روشن چاند

٭٭٭

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں