شاعری

pictureمجھے اذنِ جنوں دے دو

شاعرہ: شازیہ اکبر
موسمِ اشاعت: جنوری ۲۰۱۱ء
ا ہتماِمِ اشاعت:سرمد اکادمی، اٹک
قیمت:۲۰۰ روپے
انتساب: اُس ربِّ کائنات کی صنعت گری کے نام جس نے میرے خیال کو تمثیل کر دیا
تشکیل ای بک:نوید فخر

غزل

تری محبت کے اس جنوں نیعجیب جادو جگا دیا ہے
میں بھولنا چاہتی تھی تم کو ، زمانہ تم نے بھلا دیا

مرے لہو میں یہ ننھے منے چراغ کتنے ہی جل اُٹھے ہیں
یہ کیسے تم نے چھوا ہے جاناں کہ میرا پہلو جلادیا ہے

میں اپنے لفظوں کو نکہتوں کے پروں سے اُڑتا بھی دیکھتی ہوں
تمہاری چاہت نے میرے فن سے کثافتوں کو مِٹا دیا ہے

یہاں غبارِ سفر نے کتنے مسافروں کو بھلا دی منزل
کوئی ہے جس نے غبار رستوں پہ کہکشاں کو سجا دیا ہے

نہ اُس کے جیون میں کچھ توازن نہ اُس کی بحروں میں کچھ ترنم
کہ جس نے چاہت کے قافیے کو غزل سے اپنی مٹا دیا ہے

صفحات : 1 | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8 | 9 | 10 | 11 | 12 | 13 | 14 | 15 | 16 | 17 | 18 | 19 | 20 | 21| 22 | 23 | 24 | 25 | 26 | 27 | 28 | 29 | 30 | 31 | 32 | 33 | 34 | 35 | 36 | 37 | 38 | 39 | 40 | 41 | 42 | 43 | 44 | 45 | 46 | 47 | 48 | 49 | 50 | 51 | 52 | 53 | 54 | 55 | 56 | 57 | 58 | 59 | 60 | 61 | 62 | 63 | انڈیکس |

تازہ ترین

کیا آپ صاحب کتاب ہیں؟

کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی تصنیف دنیا بھر میں لاکھوں شائقین تک پہنچے ؟ تو کتاب ”ان پیچ“ فارمیٹ میں اور سرورق سکین کر کے ہمیں ای میل یا ارسال کریں، ہم آپ کے خواب کو شرمندہ تعبیر کریں گے۔

مزید معلومات کے لئے یہاں کلک کریں